یمن پر سعودی عرب کے فوجی حملوں میں کم سے کم 7 عام شہری شہید ہو گئے-

العالم کی رپورٹ کے مطابق مغربی یمن کے صوبہ حدیدہ کے الجاح علاقے  پر سعودی عرب کے جارح جنگی طیاروں کے حملے میں ایک ہی خاندان کی 3 خواتین اور 4 بچے شہید ہو گئے۔

اس رپورٹ کے مطابق سعودی عرب کے جارح جنگی طیاروں اور جنگی بوٹوں نے صوبہ حدیدہ کے شہر الصلیف پر کئی بار حملے کئے-

درایں اثنا یمن کی عوامی رضاکار فورس اور فوج کے میزائلی دستوں نے سعودی حملوں کے جواب میں نجران میں واقع سعودی اڈوں کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں سعودی فوج کو خاصا نقصان پہنچا-

یمن کی عوامی رضاکار فورس اور فوجی دستون نے نجران اور عسیر میں سعودی فوج کی 2 گاڑیوں کو میزائل سے تباہ کر دیا-

واضح رہے کہ یمن پر سعودی عرب کے جارحانہ حملوں میں، جو مارچ دو ہزار پندرہ سے امریکہ اور برطانیہ کی حمایت سے جاری ہیں، 11 ہزار سے زیادہ یمنی شہری شہید اور دسیوں لاکھ بے گھر ہو چکے ہیں-  

 

Jan ۱۲, ۲۰۱۷ ۱۰:۵۴ UTC
کمنٹس