ہندوستان کے آرمی چیف جنرل بیپن راوت عہدہ سنبھالنے کے بعد پہلے دورے پراس ملک کے زیر انتظام کشمیر پہنچے جہاں انھوں نے سیکورٹی کی صورتحال اور فوج کی آپریشنل تیاریوں کا جائزہ لیا۔

ہندوستانی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق آرمی چیف جنرل بیپن راوت عہدہ سنبھالنے کے بعد اس ملک کے زیر انتظام کشمیر کا پہلا دورہ کیا ۔آرمی چیف نے ادھمپور میں قائم شمالی کمان کا دورہ کیا جہاں انھوں نے سیکورٹی صورتحال اور فوج کی آپریشنل تیاریوں کو جائزہ لیا۔

ہندوستانی آرمی چیف نے نگروٹہ میں قائم 16کور ہیڈکوارٹر کا دورہ بھی کیا اسکے علاوہ وہ اکھنور اور راجوڑی سیکٹر میں اگلے مورچوں پر بھی گئے ۔آرمی چیف نے اعلی سطحٰی اجلاس کے دوران کشمیر میں سیکورٹی کی صورتحال اور شمالی کمان کی موجودہ آپریشنل تیاریوں کا جائزہ بھی لیا۔اجلاس میں لائن آف کنٹرول اور لائن آف ایکچول کنٹرول پر سیکورٹی کی صورتحال کا بھی جائزہ لیا گیا۔

اس سے قبل  اپنے عہدے کا حلف اٹھانے کے بعد جنرل بیپن راوت نے پاکستان پر دہشت گردی کی حمایت کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا  تھا کہ جنگ کی صورت میں سرحدی علاقوں میں رہنے والوں کو زبردست نقصان کا سامنا کرنا پڑے گا۔

ہندوستان اور پاکستان کے درمیان اچھے تعلقات نہ صرف ان دونوں ہمسایہ ممالک اور ان کے عوام  کے لئے بلکہ پورے خطے کے لئے مثبت اور اچھے نتائج کا باعث بنیں گے۔

 

Jan ۰۶, ۲۰۱۷ ۰۶:۲۴ UTC
کمنٹس