حریت کانفرنس کے رہنماوں نے جموں میں مسلمان بستیوں پر ہو رہے حملوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔

حریت کانفرنس کے رہنماوں سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے ہندوستان کے زیر کنٹرول جموں و کشمیر کے مقامات بشمول وادی چناب، جموں، ودای گول گلاب گڑھ، پونچھ، راجوری، بانہال، ڈوڈہ، کشتواڑ، بدرواہ، رام بن، ادھمپور، کرناہ، اوڑی، گریز وغیرہ میں رہنے والے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ کل جمعتہ المبارک کو نماز کے بعد ’’یومِ یکجہتی جموں‘‘ کی مناسبت سے پُرامن احتجاج کریں۔ حریت کانفرنس کے رہنماوں نے کہا کہ گزشتہ ستر سال سے جموں کے مسلمان کو خوف و ہراس کے ماحول میں زندگی گزارنے پر مجبور کیا جا رہا ہے۔

جموں کے مسلمانوں کے ساتھ کل یومِ یکجہتی منانے کی اپیل کرتے ہوئے حریت کانفرنس کے قائدین  نے کہا کہ نماز جمعہ کے بعد پُرامن احتجاج کے ذریعے ہم بحیثیت قوم جموں کے اپنے بھائیوں کو ایک واضح پیغام دینا چاہتے ہیں کہ ہم سب ایک جسدِ خاکی کی طرح یکسو ہیں اور آپ پر آئی کوئی بھی آفت ہم سب کے لیے سوہان روح ہے۔

 

Jan ۱۲, ۲۰۱۷ ۰۶:۵۱ UTC
کمنٹس