• کشمیرمیں حالات کشیدہ، انٹرنیٹ اور تعلیمی ادارے بند

ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر کے سوپور میں کل سکیورٹی فورسز کے ساتھ ہونے والے تصادم میں ایک عسکریت پسند کی ہلاکت کے بعد حالات کشیدہ ہو گئے۔

ہندوستانی میڈیا کے مطابق ضلع بارہ مولا کے ریبار ناپیر میں عسکریت پسندوں کے چھپے ہونے کی خفیہ اطلاع ملنے کے بعد سکیورٹی دستوں اور خصوصی آپریشنز ٹیم نے سرچ آپریشن شروع کرتے ہوئے پورے علاقے کا محاصرہ کرلیا۔

سکیورٹی دستے جیسے ہی اس علاقے کو سیل کر رہے تھے، اس دوران عسکریت پسندوں اور سکیورٹی فورسز کے مابین فائرنگ  کا تبادلہ ہوا جس سے ایک عسکریت پسند ہلاک ہو گيا۔ واقعہ کے بعد لوگ سڑکوں پر نکل آئے اور مطاہرہ کیا جس سے حالات کشیدہ ہو گئے اور حکومت نے انٹرنیٹ اور تعلیمی ادارے بند کر دیئے۔

دوسری جانب ہندوستان کے وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ ہفتہ کو کشمیر کے چار روزہ دورے پر سری نگر پہنچے۔

سری نگر پہنچنے کے فوراً بعد راجناتھ سنگھ نے وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کے ساتھ علیحدہ میٹنگ کی ۔

سرکاری ترجمان کے مطابق میٹنگ کے دوران دونوں رہنماؤں نے ریاست کی صورتحال، اتحاد کے ایجنڈے اور ریاست میں وزیراعظم کے ترقیاتی پیکیج پر عمل درآمد پر تبادلہ خیال کیا ۔

Sep ۱۰, ۲۰۱۷ ۰۳:۲۵ UTC
کمنٹس