• اسرائیل کے ساتھ امن مذاکرات لاحاصل ہیں۔حماس

حماس کے خارجہ امور کے انچارج نے غزہ کو تحریک مزاحمت کا مضبوط قلعہ اور اسرائیل کے ساتھ مذاکرات کو لاحاصل قرار دیا ہے۔

 تہران میں انتفاضہ فلسطین کی حمایت میں چھٹی بین الاقوامی کانفرنس کے موقع پر حماس کے امور خارجہ کے انچارچ اسامہ حمدان نے کہا کہ یہ کانفرنس دشوار ترین علاقائی اور عالمی حالات میں منعقد ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ خطے کی صورتحال کے سبب مسئلہ فلسطین پر توجہ کم دی گئی ہے اور اس سے متعلق معاملات سست روی کا شکار ہیں۔
اسامہ حمدان نے کہا کہ تحریک مزاحمت نے اپنا راستہ بنالیا ہے اور آج تحریک مزاحمت کے مستقبل کے حوالے سے نہیں بلکہ اسرائیل کے بارے میں سوال کیا جارہا ہے کہ اس کا مستقبل کیا ہوگا۔
انتفاضہ فلسطین کی حمایت میں چھٹی بین الاقوامی کانفرنس منگل کی صبح تہران میں شروع ہوئی تھی جس میں دنیا کے اسی ملکوں کے سات سو سے زیادہ مندوبین نے شرکت کی ہے۔
 رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای کے بصیرت افروز خطاب سے شروع ہونے والی یہ کانفرنس بدھ کی رات  ایک قرار داد پاس کرنے کے بعد ختم ہوگئی۔

Feb ۲۳, ۲۰۱۷ ۰۹:۵۳ UTC
کمنٹس