• ارجنٹائن دھماکوں کو ایران سے ملانا صیہونی سازش

ایرانی دفترخارجہ نے ارجنٹائن کے دھماکوں کو ایران سے ملانے کو صیہونی سازش قرار دیا ہے۔

اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان دفترخارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی نے ارجنٹائن کے دارالحکومت بیونس آئرس میں ماضی میں ہونے والے دھماکوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ان واقعات سے ایران کو ملانا ناجائز صیہونی حکومت کی اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف سازش ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ بیونس آئرس دھماکوں میں ایرانی شہریوں کے ملوث ہونے کا الزام ایران کے خلاف صیہونی سازش کی کڑی ہے۔

قاسمی نے کہا کہ ارجنٹائن میں مضبوط لابی ہے جس کی کوشش ہے کہ اس واقعے کے اصل ذمہ داروں کو سزا سے بچانا ہے۔

انہوں نے صیہونی وزیراعظم کی ہرزہ سرائیوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ عالمی برادری اپنی توجہ مقبوضہ فلسطین میں صیہونی مظالم اور انسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی پر مرکوز کرے۔

بہرام قاسمی نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ مقبوضہ فلسطین میں نہتے افراد کے قتل عام کو روکوائے اور اس کے علاوہ ریاستی دہشت گردی بالخصوص صیہونیوں کی جانب سے لبنان اور شام سمیت دیگر اسلامی ممالک کی جغرافیائی سالمیت کی خلاف ورزی پر نوٹس لے۔

دوسری جانب ایرانی دفترخارجہ کے ترجمان نے عرب لیگ کے اجلاس کے دوران خلیج فارس میں تین ایرانی جزیروں کے حوالے سے کئے گئے دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ غیرسنجیدہ مؤقف سے علاقائی ممالک کے درمیان اختلافات کو مزید ہوا ملے گی ۔

بہرام قاسمی نے کہا کہ خلیج فارس کے ممالک کے ساتھ باہمی احترام پر مبنی تعلقات کے قیام اور اندرونی معاملات میں عدم مداخلت اسلامی جمہوریہ ایران کی پالیسی ہے ۔

Sep ۱۴, ۲۰۱۷ ۰۷:۲۹ UTC
کمنٹس