• آئیل ٹینکر کے سانحے پر ایران میں عام سوگ کا اعلان

ایران کے تیل بردار بحری جہاز کے حادثے میں تیس ایرانی شہریوں کے جاں بحق ہونے پر ایران میں پیر کے روز عام سوگ کا اعلان کیا گیا ہے۔

رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای، صدر ایران ڈاکٹر حسن روحانی اور دیگر اعلی حکام نے اس حادثے میں جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین کو تعزیت پیش کرتے ہوئے ان کے اہل خانہ سے ہمدردی کا اظہار کیا۔


ایران کی وزارت ٹرانسپورٹ و جہاز رانی کے جاری کردہ بیان میں بھی تیل بردار بحری جہاز کے غرق ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ جہاز کے عملے کے تمام افراد جاں بحق ہو گئے۔

غرق ہونے والے بحری جہاز پر بتیس ملازمین سوار تھے جن میں تیس ایرانی اور دو بنگلہ دیشی شہری تھے۔

شنگھائی میں موجود ایران کی وزارت ٹرانسپورٹ و جہاز رانی کے خصوصی نمائندے محمد راستاد نے بتایا ہے کہ تیل بردار بحری جہاز میں لگی آگ انتہائی شدت اختیار کر گئی تھی جس کے باعث ایران کے خصوصی امدادی دستے کے ارکان کے لیے اس میں داخل ہونے کا امکان ختم ہو گیا تھا۔

قابل ذکر ہے کہ چھے جنوری کو مشرقی چین کے ساحلوں کے قریب ہانگ کانگ کا ایک مال بردار بحری جہاز ایران کے تیل بردار بحری جہاز سے ٹکرا گیا تھا جس کی وجہ سے اس میں آگ لگ گئی تھی۔

ایران کے تیل بردار بحری جہاز اور ہانگ کانگ کے مال بردار بحری جہاز کے درمیان ہونے والے تصادم کی وجہ تاحال معلوم نہیں ہو سکی ہے۔

Jan ۱۴, ۲۰۱۸ ۱۷:۰۰ UTC
کمنٹس