• ایران کی ریڈلائن میں داخل ہونے والوں کو شکست ہو گی، شمخانی

ایران کی قومی سلامتی کی اعلی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی نے کہا ہے کہ یورپ اگر غلطی سے بھی امریکہ کی ہاں میں ہاں ملا بیٹھا یا وہ امریکی صدر ٹرمپ کے چکّر میں ایران کی ریڈلائن میں داخل ہو گیا تو یقینی طور پر اسے ہی شکست ہو گی۔

ایران کی قومی سلامتی کی اعلی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی نے منگل کو تہران میں ایک بیان میں امریکہ کو ایٹمی معاہدے کا پابند بنانے کے مقصد سے فرانسیسی صدر امانوئل میکرون اور جرمن چانسلر انجیلا مرکل کے دورہ واشنگٹن کی طرف اشارہ کرتے ہوئے  کہا ہے کہ ایٹمی معاہدہ، ایک متحدہ بین الاقوامی معاہدہ ہے جس میں کسی بھی طرح کی تبدیلی اور یا عمل درآمد کا فقدان اس معاہدے کے زوال کا باعث اور ایٹمی معاہدے کے مکمل طور پر تباہ ہو جانے کے مترادف ہے۔انھوں نے ایران کے پرامن ایٹمی پروگرام کو مکمل طور پر مقامی اور اندرونی ٹیکنالوجی کا حامل قرار دیا اور کہا کہ اسی خصوصیت سے ایٹمی پروگرام کے منتظمین کے لئے مختلف قسم کی متعدد کوششوں سے بھرپور فائدہ اٹھائے جانے کے راستے بھی کھلے ہوئے ہیں۔علی شمخانی نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے علاقے میں امن و استحکام کی برقراری اور تکفیری دہشت گردی کے خلاف مہم پر قابل ذکر اخراجات برداشت کئے ہیں اس لئے وہ امریکہ، اسرائیل اور ان کے بعض علاقائی اتحادیوں کے بڑھتے ہوئے امن مخالف اقدامات پر خاموش نہیں رہ سکتا۔انھوں نے کہا کہ صیہونی حکومت اگر اب بھی رعب و وحشت پھیلانے والے نمائشی اور آمرانہ  دور کے خاتمے کی طرف متوجہ نہیں ہوئی ہے تو اسے اپنی نادانی کی قیمت بھی چکانی ہوگیایران کی قومی سلامتی کی اعلی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی نے یمن کے مظلوم عوام کے قتل عام اور اس ملک کی اعلی سیاسی کونسل کے چیئرمین صالح الصماد کی شہادت سے متعلق سعودی عرب کے مجرمانہ اقدامات کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ سیاسی رہنماؤں کا قتل، مذاکرات سے فرار اور منطق و سیاسی راہ حل سے گریز کے مترادف ہے۔قابل ذکر ہے کہ ایران کی قومی سلامتی کی اعلی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی دنیا کے پانچ براعظموں کے اعلی سیکورٹی حکام کے نویں اجلاس میں شرکت کے لئے منگل کو روس کے شہر سوچی پہنچے ہیں۔

Apr ۲۴, ۲۰۱۸ ۱۹:۵۲ Asia/Tehran
کمنٹس