• عالمی  عدالت انصاف کا فیصلہ،  ایران کی فتح

اسلامی جمہوریہ ایران نے کہا ہے کہ اگر امریکا نے ہیگ کی عالمی عدالت کے فیصلے کوتسلیم نہ کیا تو اس کے لئے بھی ضروری اقدامات اور تدابیر اپنالی گئی ہیں دوسری جانب ہیگ کی بین الاقوامی عدالت میں امریکا کے مقابلے میں ایران کی فتح کے بعد روم کی اپیل کورٹ نے بھی ایران کے مرکزی بینک کے پانچ ارب ڈالر منجمد کردینے پر مبنی امریکی درخواست کوخارج کردیا ہے

قانونی اور بین الاقوامی امور میں اسلامی جمہوریہ ایران کے نائب وزیرخارجہ غلام حسین دہقانی نے ایران کے حق میں ہیگ کی عالمی عدالت کے فیصلے اور انیس سوپچپن کے ایران امریکا معاہدے سے واشنگٹن کے نکل جانے پر مبنی ٹرمپ کی دھمکی کے بارے میں کہا کہ امریکا بہت سے بین الاقوامی معاہدوں منجملہ پیرس معاہدے اور ایٹمی معاہدے سے نکل چکا ہے اور اگر یہ سلسلہ اسی طرح جاری رہتا ہے تو وہ مستقبل قریب میں سبھی بین الاقوامی اور علاقائی معاہدوں سے نکل جائےگا - ان کا کہنا تھا کہ اسلامی جمہوریہ ایران مختلف بین الاقوامی اداروں میں اس مسئلے کو اٹھائے گا اور امریکی حکومت کو بھی اس سلسلے میں جواب دہ ہونا پڑےگا - اس درمیان ایران کے ایوان صدر کے شعبہ بین الاقوامی قوانین کے سربراہ محسن محبی نے کہا ہے کہ روم کی اپیل کورٹ نے ایران کے مرکزی بینک کے پانچ ارب ڈالر کو منجمد کرنے کی امریکی درخواست خارج کردی ہے- ان کا کہنا تھا کہ اطالوی دارالحکومت روم کی عدالت نے جون دوہزار اٹھارہ میں کچھ امریکیوں کی درخواست اور اٹلی کے داخلی قوانین کی بنیاد پر ایران کے مرکزی بینک کے اثاثے کو عبوری طور پر منجمد کردیا تھا لیکن اب یہ حکم بھی ملغی ہوچکا ہے - ایران کے ایوان صدر کے شعبہ بین الاقوامی قوانین کے سربراہ محسن محبی نے انیس سوپچپن کے تہران واشنگٹن معاہدے کو توڑنے کے امریکی اقدامات کے خلاف ہیگ کی عدالت میں ایران کی جانب سے دائر کی گئی درخواست کے بارے میں کہا کہ ایران کے بارے میں امریکا کا یہ الزام کہ تہران دہشت گردی کی حمایت کررہا ہے ہیگ کی عدالت میں ثابت نہ ہوسکا اور امریکا کے خلاف ایران کو ہیگ کی عدالت میں فتح حاصل ہوئی - انہوں نے پچھلے دنوں اہواز میں دہشت گردانہ حملے کا ذکرکرتے ہوئے جس میں پچیس افراد شہید اور ساٹھ دیگر زخمی ہوگئے تھے کہا کہ امریکا اپنے اوپر عائد الزامات سے فرار کرنے کے لئے ایران پر دہشت گردی کی حمایت کا الزام لگارہا ہے - محسن محبی نے اس بات کا ذکرکرتے ہوئے کہ ایرانی اداروں اور کمپنیوں منجملہ ایران کے مرکزی بینک کے بارے میں امریکا کے اقدامات انیس سوپچپن کے ایران امریکا معاہدے کے خلاف ہیں کہا کہ اس وقت امریکا کے بیرون ملک عدالتی اقدامات نے ایران کو نشانہ بنارکھا ہے- واضح رہے کہ ہیگ کی عالمی عدالت کے فیصلے کے مطابق اب امریکا اور ایران دونوں کو بالترتیب جمعرات اور جمعے کو تین تین گھنٹے کا وقت دیا گیا ہے کہ وہ اپنے اپنے خلاف عائد الزامات کا جواب دیں۔

ٹیگس

Oct ۱۱, ۲۰۱۸ ۱۸:۱۹ Asia/Tehran
کمنٹس