Jul ۰۴, ۲۰۱۹ ۱۹:۵۳ Asia/Tehran
  • برطانوی سفیر کو وزارت خارجہ میں طلب کر لیا گیا

ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان سید عباس موسوی نے کہا ہے کہ آبنائے جبل الطارق میں برطانوی بحریہ کے ذریعے ایران کے ایک آئیل ٹینکر کو غیر قانونی طریقے سے روک لئے جانے کے اقدام کے بعد تہران میں برطانوی سفیر کو وزارت خارجہ میں طلب کر لیا گیا۔

برطانوی بحریہ کے ذریعے ایران کے آئل ٹینکر کو روک لئے جانے اور برطانوی سفیر کو تہران میں وزارت خارجہ میں طلب کرنے کے بعد اسپین کی وزارت خارجہ کے سرپرست نے بھی کہا ہے کہ ایران سے روانہ ہونے والے آئل ٹینکر کو امریکا اور برطانیہ کے کہنے پر روکا گیا-

اسپین کی وزارت خارجہ کے سرپرست جوزف بورل نے جو فیڈریکا موگرینی کی جگہ یورپی یونین کے شعبہ خارجہ پالیسی کے سربراہ بنے ہیں، کہا کہ میڈریڈ اس آئل ٹینکر کو روکے جانے اور اسپین کی ارضی سالمیت پر پڑنے والے اس اقدام کے اثرات کا جائزہ لے رہا ہے-

انہوں نے کہا کہ ایرانی آئل ٹینکر کو جس مقام پر روکا گیا ہے وہ اسپین کی  حدود میں آتا ہے-

ٹیگس

کمنٹس