• ترکی کے شہر کچی آورن میں امریکی برانڈ پر پابندی

ترکی کے شہر کچی آورن کے میئر نے اپنے ملک کے خلاف واشنگٹن کی تجارتی جنگ کے جواب میں امریکا کے تین مشہور برانڈ کی سرگرمیوں پر پابندی لگادی ہے۔

ترکی کے شہرکچی آورن کے میئر مصطفی آک نے کہا کہ اس شہر میں امریکا کے تین معروف برانڈ میک ڈونلڈ، اسٹار باکس اور برگرکینگ کی سرگرمیوں پر پابندی عائد کی جارہی ہے۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ ان کا یہ فیصلہ ترکی کے دیگر شہروں کے لئے بھی ایک مثال بنےگا۔
واضح رہے کہ ترکی میں جولائی دوہزار پندرہ کی ناکام بغاوت میں ملوث ہونے اور جاسوسی کے الزام میں انقرہ حکومت نےامریکی پادری برانسن کو گرفتار کررکھا ہے۔
امریکا نے یکم اگست کو یہ کہتے ہوئے کہ امریکی پادری پر ترک حکومت کا الزام غلط ہے ترکی کے وزرائے قانون اور داخلہ پر پابندی عائد کردی ۔امریکا کا کہنا ہے کہ ان دونوں وزیروں نے امریکی پادری کو گرفتار کرکے جیل میں ڈالنے میں اہم رول ادا کیا ہے۔
واشنگٹن نے اس کے بعد ترکی سے درآمد کی جانے والی مصنوعات پر کسٹم ڈیوٹی عائد کرکے ترکی کے خلاف تجارتی جنگ بھی چھیڑ دی۔
ترکی کے خلاف امریکا کی تجارتی جنگ اور پابندیوں کے بعد ترکی کی کرنسی کی قدر میں ڈالر کے مقابلے میں تقریبا پینتیس فیصد کمی واقع ہوگئی۔
ترک عوام اور خاص طور پر ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان کے حامی لوگوں کا کہنا ہے کہ ترکی میں کرنسی کا بحران امریکا نے جان بوجھ کر پیدا کیا ہے کہ تاکہ ترکی کو کمزور کرے۔

Aug ۱۸, ۲۰۱۸ ۲۱:۰۳ Asia/Tehran
کمنٹس