• اسرائیلی اقدامات جنگی جرم ہیں، فلسطینی وزارت خارجہ

فلسطین کی وزارت خارجہ نے اسرائیلی فوجیوں کے ہاتھوں کم سن بچوں کی شہادت کو جنگی جرم قرار دیا ہے۔

اتوار کے روز رام اللہ میں جاری کیے جانے والے ایک بیان میں فلسطینی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ حق واپسی مارچ کے دوران بارہ سالہ فلسطینی بچے کی شہادت کے حوالے سے سامنے آنے والے ویڈیو سے واضح ہو گیا ہے کہ اسرائیلی فوجیوں نے جنگی جرم کا ارتکاب کیا ہے۔
بیان میں عالمی برادری سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ اسرائیلی فوجیوں کے اس وحشیانہ عمل کی مذمت میں تاخیر سے کام نہ لے اور صیہونی حکومت کے مجرمانہ اقدامات کے خلاف ٹھوس موقف اختیار کرے۔
فلسطین کی وزارت خارجہ نے اسرائیلی کابینہ اور صیہونی وزیر اعظم بن یامین نتن یاہو کو فلسطینیوں کے خلاف مجرمانہ اقدامات کا براہ راست ذمہ دار قرار دیا ہے۔
بیان میں ایک بار پھر فلسطینی حکومت کے اس موقف کا اعادہ کیا گیا ہے کہ اسرائیل کے مجرمانہ اقدامات کے معاملے کو عالمی فوجداری عدالت میں اٹھایا جائے گا۔
قابل ذکر ہے کہ حق واپسی کے نام سے فلسطینیوں کے ہفتے وار مارچ کا سلسلہ بدستور جاری ہے جس کے دوران صیہونی فوجیوں کی وحشیانہ فائرنگ میں ایک سو اسّی سے زائد فلسطینی شہید ہو چکے جن میں اٹھائیس بچے بھی شامل ہیں۔

Sep ۱۶, ۲۰۱۸ ۱۸:۵۷ Asia/Tehran
کمنٹس