• سعودی جارحیت میں ایک ہی خاندان کے 8 افراد شہید

سعودی اتحاد کے یمن کے نہتے عوام پر کل ہونے والے تازہ حملے میں ایک ہی خاندان کے 8 افراد شہید ہو گئے۔

ارنا کی رپورٹ کے مطابق سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے کل یمن کے صوبے حجہ کے حرض علاقے پر وحشیانہ بمباری کی جس کے نتیجے میں ایک ہی خاندان کے 8 افراد شہید ہو گئے۔ شہید ہونے والوں میں والد اور والدہ کے علاوہ ان کے 6 بچے بھی شامل ہیں جن کی عمریں 2 سے 12 سال کے درمیان ہے۔ اس وحشیانہ بمباری میں دو افراد زخمی بھی ہوئے ۔

سعودی عرب نے امریکا اور اسرائیل کی حمایت  سے اور اتحادی ملکوں کے ساتھ مل کر چھبیس مارچ دو ہزار پندرہ سے یمن پر وحشیانہ جارحیتوں کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے ۔ اس دوران سعودی حملوں میں دسیوں ہزار یمنی شہری شہید اور زخمی ہوئے ہیں جبکہ دسیوں لاکھ یمنی باشندے اپنے گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہوئے ہیں ۔

یمن کا محاصرہ جاری رہنے کی وجہ سے یمنی عوام کو شدید غذائی قلت اور طبی سہولتوں اور دواؤں کے فقدان کا سامنا ہے ۔

 سعودی عرب نے غریب اسلامی ملک یمن کی بیشتر بنیادی تنصیبات اسپتال اور حتی مسجدوں کو بھی منہدم کردیا ہے لیکن اس کے باوجود سعودی عرب یمن پر مسلط کردہ جنگ میں اپنے اہداف تک پہنچنے میں بری طرح ناکام ہوگیا ہے۔

ٹیگس

Nov ۰۸, ۲۰۱۸ ۱۰:۴۷ Asia/Tehran
کمنٹس