فوعہ و کفریا کے مظلوم باشندے جو تکفیریوں کے محاصرے میں دو سال رہ کر شدید ترین تکلیفیں برداشت کر چکے تھے،حلب کی جانب منتقل ہوتے وقت تکفیری دھماکے کا نشانہ بنے۔فوعہ و کفریا کے بچوں، بیماروں،زخمیوں اور خواتین سے بھری بسوں کے قافلہ کے پاس احرار الشام دہشتگرد گروہ کے ایک ناپاک جرثومہ نے چپس اور کیک دینے کے بہانے بچوں اور خواتین کو اپنے قریب اکٹھا کیا اور بارود سے بھری اپنی گاڑی کو اڑا دیا۔ اس حادثہ میں سو سے زیادہ جاں بحق اور ۵۰۰ کے قریب زخمی ہوئے ہیں۔

Apr ۱۶, ۲۰۱۷ ۰۹:۴۱ UTC
کمنٹس