• پاکستان کےصدر اور وزیراعظم کی جانب سے دھماکے کی مذمت

پاکستان کےآرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے دھماکے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ سیکورٹی فورسز پر حملہ جشن آزادی کی تقاریب کو سبوتاژ کرنے کی سازش ہے لیکن ہماری جدوجہد ہر طرح کے چیلنج کا ڈٹ کر مقابلہ کرے گی۔

پاکستان کےصدر ممنون حسین، وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، ،وزیراعلیٰ بلوچستان ثناء اللہ زہری، وزیر مملکت برائے اطلاعات مریم اورنگزیب اور اس ملک کی سیاسی اور مذھبی جماعتوں نے کوئٹہ میں  کل ہونے والے دھماکے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

شاہد خاقان عباسی نے جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین سے دلی تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس واقعے میں بے گناہ معصوم عوام کی جانوں کے نقصان پر دل خون کے آنسو رو رہا ہے۔ واضح رہے کہ کل کوئٹہ میں پشین اسٹاپ کے قریب سیکیورٹی فورسز پر خود کش حملے میں 8 اہلکاروں سمیت 15 افراد جاں بحق اور 40 کے قریب زخمی ہو گئےتھے۔

دھماکے کی شدت اس قدر زیادہ تھی کہ اس کی آواز دور دور تک سنی گئی جب کہ دھماکے کے نتیجے میں قریبی عمارتوں کے شیشے بھی ٹوٹ گئے۔ عینی شاہدین کے مطابق دھماکا ایک گاڑی میں ہوا جس کے بعد علاقے میں افرا تفری پھیل گئی۔ بم ڈسپوزل اسکواڈ کے مطابق موٹر سائیکل سوار خود کش حملہ آور نے خود کو دھماکا خیز مواد کی مدد سے اڑایا اور دھماکے میں 20 سے 25 کلو گرام تک بارودی مواد استعمال کیا گیا۔

پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور کی جانب سے سوشل میڈیا پر جاری بیان میں کہا گیا کہ دھماکے میں آرمی کے ٹرک کو نشانہ بنایا گیا جس میں 8 اہلکاروں سمیت 15 افراد جاں بحق اور 25 زخمی ہوئے، دھماکے میں آتش گیر مواد استعمال کیا گیا جس کے نتیجے میں قریبی گاڑیوں میں آگ بھڑک اٹھی۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق معمول کی سیکیورٹی پر مامور فورسز کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا۔ دھماکے میں زخمی ہونے والوں کو سی ایم ایچ منتقل کر دیا گیا ہے۔

Aug ۱۳, ۲۰۱۷ ۰۴:۵۰ UTC
کمنٹس