• مسئلہ کشمیر کے جلد اورمنصفانہ حل پر تاکید

پاکستان کا کہنا ہے کہ اس کی پالیسی عدم مداخلت پر مبنی ہے۔

پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد میں سیمینارسے خطاب میں پاکستان کے سابق سفیرعبد الباسط کاکہنا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے جلد اور منصفانہ حل کے بغیر خطے میں امن ممکن نہیں، پاکستان ہندوستان کےساتھ بات چیت چاہتا ہے ۔

سیمینار سے خطاب میں چیئرمین قائمہ کمیٹی دفاع مشاہد حسین سید کا کہنا تھا کہ سی پیک خطے کے لئے بڑا گیم چینجر ہے، پاکستان کی خارجہ پالیسی تمام ہمسایہ ممالک سے دوستانہ ہے اور پاکستان خطے میں اسلحہ اور جوہری دوڑ کے خلاف ہے۔

چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات کا کہنا تھا کہ پاکستان افغانستان میں عدم استحکام کی بھاری قیمت چکا رہاہے، امن کے لئے اپنی ذمہ داریوں سے آگاہ ہیں اور دفاع سے غافل نہیں ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہندوستان سے بہتر تعلقات کا راستہ صرف کشمیر سے ہو کر گزرتاہے، اس میں کوئی بائی پاس نہیں، سی پیک کے خلاف ہر سطح پر سازش کی جارہی ہے۔

 

Nov ۱۵, ۲۰۱۷ ۰۵:۰۷ UTC
کمنٹس