• یوم مردہ باد امریکہ،  مردہ باد اسرائیل

علامہ ناصر عباس کا کہنا ہے کہ امریکی صدر کا اسلام دشمن متعصبانہ رویہ عالمی امن کے لئے خطرہ بنتا جا رہا ہے۔ اس اقدام کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے قبلہ اول کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے اور وہاں امریکی سفارت خانہ کھولنے کا اعلان شرپسندی ہے، جس کے خلاف جمعہ کے روز ملک بھر میں ’’امریکہ و اسرائیل مردہ باد‘‘ مظاہرے کئے جائیں گے۔

 انہوں نے کہا کہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینا امت مسلمہ کے زخموں پر نمک پاشی ہے اس پر خاموش رہنا امت مسلمہ کی توہین ہے۔ عالمی قوانین کی اس پامالی پر تمام مذہبی و سیاسی جماعتوں، طلبا تنظیموں اور ریاستی اداروں کو اپنی آواز بلند کرنا ہوگی۔ مسلمان ہونے کے ناطے بیت المقدس سے ہم سب کا مذہبی تعلق جڑا ہوا ہے۔ امریکہ اپنی ناجائز اولاد اسرائیل کا ہمیشہ دفاع کرتا آیا ہے۔ اس حمایت کی بنیاد اسلام دشمنی کے علاوہ اور کوئی نہیں۔

سربراہ ایم ڈبلیو ایم نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی اسلام دشمن پالیسیوں میں اسے عرب مسلم ممالک کی مکمل حمایت حاصل ہے، جو افسوسناک ہے۔ عالم اسلام کی تنزلی عرب حکمرانوں کی خیانت کا نتیجہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ مظلوم فلسطینیوں اور بیت المقدس کے حوالے سے پاکستان کو واضح اور دوٹوک موقف اختیار کرنا چاہیے۔

Dec ۰۸, ۲۰۱۷ ۰۶:۳۱ UTC
کمنٹس