• قصور کے بعد سرگودھا میں نوجوان لڑکی کا قتل

ایک ایسے وقت جب پاکستان کے صوبہ پنجاب کے شہر قصور میں کمسن بچی کے قتل کے لرزہ خیز واقعے کے خلاف پورے ملک میں شدید غم وغصہ پایا جارہا ہے سرگودھا میں بھی جمعرات کو ایک نوجوان لڑکی کو زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا ہے۔

پاکستانی میڈیا کے مطابق پندرہ سے اٹھارہ سالہ لڑکی کے بہیمانہ قتل کا دل دہلا دینے والا واقعہ سرگودھا کے علاقے تصور آباد بھلوال میں پیش آیا۔ لڑکی کے والدین کا کہنا ہے کہ بیٹی صبح لاپتہ ہوگئی تھی اور پانچ گھنٹے تلاش کرنے کے بعد کھیتوں سے اس کی لاش ملی ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ لڑکی کو زیادتی کے بعد گلا دبا کر قتل کیا گیا ہے۔ مقتولہ کے ورثا نے تحصیل ہیڈکواٹر اسپتال میں پولیس کے خلاف نعرے بازی کی۔

پولیس نے واقعے میں ملوث دو ملزمان کو گرفتار کرنے کا دعوی کیا ہے۔ ادھر قصور میں کمسن بچی کو درندگی کا نشانہ بنانے کے واقعے کے خلاف جمعرات کو بھی پرتشدد احتجاج کیا گیا ہے۔

ڈنڈا بردار مشتعل مظاہرین نے قصور شہر کے مختلف علاقوں میں پرتشدد مظاہرے اور ملزمان کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔ سانحہ قصور پر یوم سیاہ منایا گیا اور شہر میں دوسرے روز بھی دکانیں، تجارتی مراکز اور اسکول بند رہے۔

سانحہ قصور کے خلاف ملک کے مختلف شہروں میں لوگ سڑکوں پر نکلے اور جگہ جگہ مظاہرے کرکے کمسن بچی کے قاتل کی گرفتاری کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

Jan ۱۱, ۲۰۱۸ ۱۵:۲۲ UTC
کمنٹس