• عدلیہ مخالف تقاریر، نوازشریف اور مریم نواز پر عبوری پابندی

پاکستان کی لاہور ہائی کورٹ نے سابق وزیراعظم نوازشریف اور ان کی بیٹی مریم نواز کی عدلیہ مخالف تقریریں نشر کرنے پر عبوری پابندی عائد کر دی ہے۔

پاکستانی میڈیا رپورٹوں کے مطابق لاہور ہائی کورٹ  کے تین رکنی بینچ نے نوازشریف، ان کی بیٹی مریم نواز اور نون لیگ کے متعدد رہنماؤں کے خلاف عدلیہ مخالف تقریروں کے بارے میں دائر درخواستوں کی سماعت کی-

سماعت کے بعد فیصلہ سناتے ہوئے لاہور ہائی کورٹ نے پیمرا کو عدلیہ مخالف تقریر سے متعلق زیرالتوا درخواستوں کا پندرہ روز کے اندر فیصلہ سنانے کا حکم دیا ہے- لاہور ہائی کورٹ نے فیصلہ دیا کہ اس دوران نوازشریف، ان کی بیٹی مریم نواز یا کوئی بھی دیگر شخص عدلیہ مخالف تقریر کرے گا تو پیمرا اس کی نشریات روک دے گا-

عدالت نے کہا ہے کہ پیمرا نگرانی کا عمل سخت کرے اور کوئی بھی توہین آمیز تقریر یا پروگرام نشر نہیں ہونا چاہئے- گذشتہ انتیس جنوری کو لاہور ہائی کورٹ میں نوازشریف، مریم نواز، رانا ثناء اللہ اور طلال چودھری کے خلاف توہین عدالت کی متفرق درخواستیں دائر کی گئی تھیں-

 

Apr ۱۶, ۲۰۱۸ ۱۶:۱۱ Asia/Tehran
کمنٹس