روس نے کہا ہے کہ اس کی سرحدوں کے قریب نیٹو کی بڑھتی ہوئی سرگرمیوں سے جنگ و محاذآرائی کا خطرہ بڑھ گیا ہے۔

نیٹو میں روس کے مستقل نمائندے نے کہا ہے کہ روس کی سرحدوں کے قریب نیٹو کی سرگرمیوں سے ایسے حالات پیدا ہو گئے ہیں کے جن کے نتیجے میں ہتھیاروں کی دوڑ کے آغاز اور جنگ کا خطرہ بہت بڑھ گیا ہے۔انھوں نے کہا کہ نیٹو کی جانب سے روس کی سرحدوں کے قریب فوجی سرگرمیوں منجملہ فوجی مشقوں سے نئے حقائق اور سرد جنگ کی تاریخ کی نشاندہی ہوتی ہے اور نتیجے میں ہتھیاروں کی دوڑ اور محاذ آرائی کی ایسی صورت حال پیدا ہو جائے گی کہ جس کو کنٹرول کرنا مشکل ہو جائے گا۔نیٹو میں روس کے نمائندے نے مشرقی یورپ میں فوجیوں کی تعیناتی کے بارے میں نیٹو کے منصوبے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ نیٹو کے گذشتہ سال کے اجلاس کا مقصد، روس کے ممکنہ حملے کا مقابلہ کرنے کی منظوری دینا تھا۔انھوں نے مختلف مغربی ملکوں میں نیٹو کے ہتھیاروں کے گوداموں اور بالٹیک کے مختلف ملکوں میں ایئربیس کی تعداد میں اضافے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ روس نے سیاسی اور فوجی نقطہ نظرسے ان تمام اقدامات کا جائزہ لیا ہے۔

Mar ۲۰, ۲۰۱۷ ۱۳:۰۲ UTC
کمنٹس