• امریکی انتخابات میں روسی مداخلت من گھڑت

روس نے کہا ہے کہ انتخابات میں دھاندلی کا الزام لگا کر امریکا خود کو نقصان پہنچا رہا ہے۔

ماسکو میں اپنی سالانہ پریس کانفرنس کے دوران روسی صدر ولادیمیر پوتین کا کہنا تھا کہ امریکی انتخابات میں مداخلت کے الزامات بے بنیاد ہیں، سفارت کاروں کا آپس میں رابطے رکھنا ایک معمول کا عمل ہے اور ان الزامات کا مقصد صدر ٹرمپ کی صدارت کو غیر قانونی ثابت کرنا ہے۔

امریکا اور روس تعلقات پر روسی صدر کا کہنا تھا کہ کچھ پابندیوں کے سبب تعلقات میں بہتری نہیں آسکی تاہم انہوں نے امید ظاہر کی کہ وقت کے ساتھ روس اور امریکا کے تعلقات معمول پر آجائیں گے۔

افغانستان کے حوالے سے روسی صدر کا کہنا تھا کہ افغانستان میں سیکورٹی خدشات بڑھ رہے ہیں اور روس کابل حکومت کی مدد کے لیے تیار ہے کیونکہ اس وقت اسے عالمی معاونت کی ضرورت ہے۔

شمالی کوریا کے حوالے سے روسی صدر کا کہنا تھا کہ شمالی کوریا میں جو ہو رہا ہے وہ ردعمل ہے کیونکہ امریکا بہت سے معاہدوں سے پیچھے ہٹ گیا ہے۔ روس کوریائی خطے کو ایٹمی ہتھیاروں سے پاک دیکھنے کی پالیسی پر کاربند ہے۔

شام کے حوالے سے صدر پوتین کا کہنا تھا کہ امریکا، شام میں قیام امن کے عمل میں مکمل طور پر حصہ نہیں لے رہا۔

Dec ۱۵, ۲۰۱۷ ۰۹:۲۰ Asia/Tehran
کمنٹس