• یورپی پارلیمنٹ میں میکرون کے خلاف اور شام پر حملے پر احتجاج

یورپی پارلیمنٹ میں فرانسیسی صدر کے خطاب کے ساتھ ہی یہ پارلیمنٹ شام پر امریکہ، برطانیہ اور فرانس کے حملے کے خلاف احتجاج کے میدان میں تبدیل ہو گئی۔

فرانس پریس کے مطابق  یورپی پارلیمنٹ کے اراکین کی ایسی تصاویر جاری کی ہیں جو ایسے پلے کارڈ لئے ہوئے تھے جن پر لکھا  تھا کہ شام کو چھوڑ دو، یورپی پارلیمنٹ کے اراکین اس طرح سے  شام کے امور میں مداخلت بند کئے جانے کا مطالبہ کر رہے تھے۔فرانس کے صدر میکرون، یورپی پارلیمنٹ سے اپنے خطاب میں اصلاحات سے متعلق اپنے منصوبوں پر پارلیمانی اراکین کی حمایت حاصل کرنے کی کوشش کر رہے تھے، مگر ان اراکین نے نہ صرف عدم دلچسپی کا اظہار، بلکہ شام پر حملے میں امریکہ کا ساتھ دینے پر شدید اعتراض کیا۔واضح رہے کہ امریکہ، برطانیہ اور فرانس نے شامی حکومت پر کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کا الزام عائد کر کے شام کے کئی شہروں میں  میزائل حملہ کیا ہے جس پر عالمی سطح پر شدید احتجاج کیا جا رہا ہے۔

Apr ۱۷, ۲۰۱۸ ۱۸:۳۶ Asia/Tehran
کمنٹس