• ایران کے خلاف نیٹو کا بیان امریکی دعوے کی تکرار

نیٹو کے رکن ملکوں کے سربراہوں نے اپنے اجلاس کے پہلے دن کے بیان میں ایران کے دفاعی پروگرام کے خلاف امریکا کے ہی ایران مخالف دعوؤں کی تکرار کی ہے۔

نیٹو کے رکن ملکوں کے سربراہوں نے اپنے اجلاس کے پہلے دن کے بیان میں اپنے ایک تشہیراتی حربے میں ایران کے میزائلی پروگرام پر تشویش کا اظہار کیا اور دعوی کیا ہے کہ ایران کے دفاعی اقدامات مشرق وسطی میں عدم استحکام کا باعث بن رہے ہیں۔
نیٹو کے رکن ملکوں کے سربراہی اجلاس کے بیان میں ایران سے کہا گیا ہے کہ وہ مشرق وسطی میں غاصب اور غیر قانونی اسرائیلی حکومت کے خلاف استقامتی محاذ کی حمایت بند کردے۔ بیان میں ایران کے داخلی معاملات میں مداخلت کرتے ہوئے تہران سے کہا گیا ہے کہ وہ اپنی دفاعی سرگرمیوں سے دستبردار ہوجائے۔
نیٹو کے رکن ملکوں نے اسی طرح اس بات کا بھی عہد کیا ہے کہ وہ ایران کی ایٹمی سرگرمیوں کے پرامن ہونے اور آئی اے ای اے کے ساتھ تہران کے تعاون اور ان کے بقول ایٹمی ہتھیاروں تک ایران کی رسائی نہ ہونے کے بارے میں اطمینان حاصل کریں گے۔
ایران کی پرامن ایٹمی سرگرمیوں میں شکوک پیداکرنے کی غرض سے نیٹو کی کوشش ایک ایسے وقت ہے جب آئی اے ای اے نے اپنی گیارہ سے زائد رپورٹوں میں اس بات کی صراحت کے ساتھ تصدیق کی ہے کہ ایران نے جامع ایٹمی معاہدے پر پوری طرح سے عمل کیا ہے اور اس کی ایٹمی سرگرمیاں پرامن ہیں۔
نیٹو نے ایران کے میزائلی اور دفاعی پروگرام پر ایک ایسے وقت اپنی بے بنیاد تشویش کا اظہار کیا ہے جب ایران نے بارہا کہا ہے کہ دفاعی پروگرام ہر ملک کا اپنا بنیادی حق ہے اور ایران کے میزائلی پروگرام کا ایٹمی معاہدے اور اس معاہدے کی توثیق میں سلامتی کونسل کی قرارداد بائیس اکتیس سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔
ایران کے حکام کا کہنا ہے کہ ملک کی دفاعی توانائیوں اور میزائلی پروگرام پر کسی سے بھی کوئی بات نہیں ہوگی۔ نیٹو نے ایران کے دفاعی پروگرام پر نیٹو کا یہ بیان اس عالم میں دیا ہے کہ نیٹو کے رکن ممالک منجملہ امریکا برطانیہ اور فرانس علاقے کے دیگر ملکوں خاص طور پر سعودی عرب متحدہ عرب امارات اور بحرین کو اربوں ڈالر کے بھاری ہتھیار فروخت کررہے ہیں۔
اس سے پہلے یورپی یونین اور خود نیٹو میں شریک متعدد مغربی ممالک یہ کہہ چکے ہیں کہ ایران کے میزائیلی پروگرام ایٹمی معاہدے کے منافی نہیں ہیں اور ہم ایٹمی معاہدے کو باقی رکھیں گے۔

ٹیگس

Jul ۱۲, ۲۰۱۸ ۲۰:۰۴ Asia/Tehran
کمنٹس