Jan ۰۷, ۲۰۱۹ ۰۹:۲۴ Asia/Tehran
  • فرانس پیلی جیکٹس کے پُرتشدد مظاہرے

فرانسیسی مظاہرین نے صدر سے استعفیٰ کا مطالبہ کیا ہے۔

فرانس میں آٹھ ہفتوں سے جاری پیلی جیکٹس کا احتجاج پُرتشدد شکل اختیار کرگیا ہے، مظاہرین کار لفٹر کے ذریعہ دیوار توڑ کر منسٹری میں داخل ہو گئے، مظاہرین صدر سے استعفیٰ کا مطالبہ کر رہے ہیں، پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس کا استعمال کیا ہے اور متعدد مظاہرین کو گرفتار کرلیا ہے۔

فرانسیسی وزارت داخلہ کے مطابق مظاہرین کی تعداد پچاس ہزار کے قریب ہے۔ دوسری طرف فرانس کے دیگر شہروں میں بھی مظاہرے شروع ہو گئے۔

گزشتہ روز میکرون حکومت نے مظاہرین کو فسادی قرار دیتے ہوئے ان کے خلاف سخت اقدام اٹھانے کا اعلان کیا تھا، جس کے بعد حالات سدھرنے کے بجائے مزید کشیدہ ہو گئے ہیں۔

واضح رہے کہ فرانس میں 17 نومبر سے حکومت کی اقتصادی پالیسیوں کے خلاف احتجاج کیا جا رہا ہے اور پولیس کے ساتھ جھڑپوں میں اب تک تقریباً دس افراد ہلاک اورسینکڑوں زخمی ہو چکے ہیں۔

فرانس میں تیل کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف شروع ہونے والا احتجاج اب سرمایہ دارانہ نظام کے خلاف احتجاجی تحریک کی شکل اختیار کر چکا ہے جسے روکنے میں حکومت ناکام ہوگئی ہے۔

ٹیگس

کمنٹس