Feb ۲۳, ۲۰۱۹ ۰۷:۴۴ Asia/Tehran
  • یورپ امریکہ کے ہاتھوں یرغمال

روس نے کہا ہے کہ امریکا نے اپنی پالیسیوں سے پورے یورپ کو یرغمال بنا رکھا ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف نے امریکی پالیسیوں کے روس پر اثرات کے موضوع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ امریکاکئی دہائیوں قبل جوہری توانائی سے دست بردار ہوکر مرتب کی گئی یکطرفہ پالیسیوں کے تحت یورپ کے ہاتھ پاؤں باندھ کر اسے یرغمال بنا رہا ہے۔

سرگئی لاوروف نے کہا کہ امریکا کے زیر اثر نیٹو اپنی وسعت پذیری کی پالیسی کے تحت مقدونیہ، یوکرین اور جارجیا کو اپنی صف میں شامل کرنے کی کوشش کر رہا ہے جس سے نیٹو کی یورپ میں فوجی کارروائیوں میں اضافہ ہو جائے گا۔

روسی وزیر خارجہ نے یورپی یونین سے تعلقات کے فروغ پر زور دیتے ہوئے کہا کہ یورپی یونین کی تاجر برادری امریکی پابندیوں سے اکتا چکی ہے اور تاجر اب روس کی جانب دیکھ رہے ہیں جس کے باعث روس اور یورپی یونین  کے باہمی تجارتی حجم میں 20 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

روسی وزیرخارجہ نے امریکا کو یورپی یونین پر پابندی عائد کرنے سے باز رہنے کی تاکید کرتے ہوئے کہا کہ روس اور یورپی یونین کے درمیان تجارتی حجم 300 ارب ڈالر تک بڑھ چکا ہے۔

ٹیگس

کمنٹس