May ۰۳, ۲۰۲۱ ۱۷:۵۵ Asia/Tehran
  • آہ رکنِ ہدایت منہدم ہو گیا!

وصی مصطفیٰ (ص)، ہمسر زہرا (ع)، ابو الحسنین (ع)، عدل مجسم، صدیق اکبر حضرت امیر المومنین علی بن ابی طالب علیہما السلام کے فرق مبارک پر ماہ رمضان کی انیسویں سحر سنہ ۴۰ ہجری کو شقی ترین فرد ابن ملجم مرادی ملعون نے ضربت لگائی جس کے بعد آپ زخم کی تاب نہ لا کر کے ۲۱ رمضان کو اس دار فانی سے رخصت ہوئے۔

غم و اندوہ کے اس قیامت خیز موقع پر ہم سبھی فرزندان اسلام کی خدمت میں تسلیت و تعزیت پیش کرتے ہیں۔ اسی مناسبت سے ایک قدیمی نوحہ قارئین کرام لئے پیش خدمت ہے۔

لو قتل  ہوا نفس خدا نفس پیمبر

اللہ نمازی  کا  لہو اور ترا گھر

آتا     ہے      تباہی     میں  محمد (ص)   کا      گھرانہ

کچھ   کرب  و   بلا   سے  نہیں   کم   کوفے   کا  منظر

لو قتل  ہوا نفس خدا نفس پیمبر

اللہ نمازی  کا  لہو اور ترا گھر

کوئی   تو  دلِ   شبر  و  شبیر  سنبھالے  زہرا  کی  دعا لے

آ    جائیں     کلیجے      نہ     یتیموں     کے     لبوں    پر

لو قتل  ہوا نفس خدا نفس پیمبر

اللہ نمازی  کا  لہو اور ترا گھر

محراب عبادت میں عجب ہو لا سماں ہے، سکتے میں اذاں ہے

ویران     ہوئے     جاتے    ہیں     اب    مسجد    و    منبر

لو قتل  ہوا نفس خدا نفس پیمبر

اللہ نمازی  کا  لہو اور ترا گھر

اے خلق ابھرتے ہوئے سورج سے یہ کہہ دے، کِرنوں کو سمیٹے

سیدانیوں    کے    سر     سے     گری     پڑتی     ہیں    چادر

لو قتل  ہوا نفس خدا نفس پیمبر

اللہ نمازی  کا  لہو اور ترا گھر

ٹیگس