Jan ۱۷, ۲۰۱۹ ۱۰:۴۰ Asia/Tehran
  • ایران کی سائنسی ترقی کا سفر جاری رہے گا: بہرام قاسمی

اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے ملک کی سیٹلائیٹ لانچنگ کے خلاف امریکہ اور فرانس کے مؤقف کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران اپنی سائنسی ترقی کو اغیار کے بے جا خدشات سے متاثر نہیں ہونے دے گا۔

اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی نے اپنے ایک بیان میں امریکی اور فرانسیسی دفتر خارجہ کے بیانات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایران وہ راستہ اپنائے گا جو قومی مفادات اور عوام کی بہتری کے مطابق ہو اور یقینا ہم ایران کی سائنسی ترقی کے سامنے دوسروں کے بے جا خدشات کو مقدم نہیں رکھتے ۔

بہرام قاسمی نے بحران کا شکار مغربی ایشیا کے خطے کی ابتر صورتحال کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یہاں اربوں ڈالر کے ہتھیار لائے جا رہے ہیں جس کی وجہ سے امریکہ اور فرانس کے اتحادی ممالک نے شرمناک جرائم کئے اور انسانی بحران کے المیہ کا باعث بنے جبکہ اس المیہ پر تشویش کا اظہار کرنے کے بجائے ایران کی پُرامن سائنسی سرگرمیوں پر بے جا خدشات کا اظہار کیا جا رہا ہے.

ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ سلامتی کونسل کی قرارداد 2231 کی غلط تفسیر کی جا رہی ہے جبکہ ایران کو بھی دوسرے ممالک کی طرح سائنسی ترقی اور جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کا حق حاصل ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران کئی برسوں سے ظالمانہ اور غیرقانونی پابندیوں کا شکار رہا مگر ہم نے اپنے ماہر جوانوں اور سائنسدانوں کی بدولت سائنسی ترقی کے لئے اندرونی وسائل پر انحصار کرتے ہوئے سائنسی اور ٹیکنالوجی کے شعبوں میں ملکی ضروریات کو پورا کیا اور مستقبل میں بھی ترقی اور خوشحالی کے سلسلے کو جاری رکھیں گے ۔

واضح رہے کہ روس کے نائب وزیر خارجہ سرگی ریابکوف نے بھی منگل کے روز ایران کے سیٹلائیٹ لانچنگ اور میزائلی پروگرام کے حوالے سے امریکی اور مغربی ممالک کے موقف پر کڑی نکتہ چینی کی۔

ٹیگس

کمنٹس