• یمنی بچوں کی بس پر سعودی طیاروں کا حملہ،90 سے زائد شہید و زخمی

سعودی حکومت کے جنگی طیاروں نے یمن کے صوبے صعدہ کے شہر ضحیان میں یمنی بچوں کو لے جانے والی بس کو نشانہ بنایا ہے جس میں درجنوں کم سن بچے شہید اور زخمی ہوئے ہیں۔

صعدہ میں اسپتال کے ذرائع نے بتایا ہے کہ ضحیان میں بچوں کی حامل بس پر سعودی حکومت کی وحشیانہ بمباری میں کم سے کم انتالیس عام شہری شہید اور پچاس سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔ انٹرنیشنل ریڈکراس کمیٹی نے بھی اپنے ایک ٹوئیٹ میں اس بات کی تصدیق کی ہے کہ شہید اور زخمی ہونے والوں میں زیادہ تعداد بچوں کی ہے۔یہ پہلی بار نہیں ہے جب یمن کے خلاف تین سال سے زیادہ عرصے سے جاری جنگ کے دوران سعودی جنگی طیاروں نے بے گناہ بچوں اور عام شہریوں کو خاک وخون میں غلطاں کیا ہے۔گزشتہ ہفتے بھی سعودی حکومت کے جنگی طیاروں نے یمن کے مغربی ساحلی شہر الحدیدہ میں ایک اسپتال اور شہر کی مچھلی مارکیٹ پر بمباری کی تھی جس میں کم سے کم ساٹھ عام شہری شہید ہوگئے تھے۔سعودی عرب نے مارچ دوہزار پندرہ سے یمن کو زمینی، فضائی اور سمندری جارحیت کا نشانہ بنا رکھا ہے جس کے نتیجے میں ہزاروں بے گناہ یمنی شہری شہید اور زخمی ہوئے ہیں اور لاکھوں افراد کو اپنا گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہونا پڑا ہے۔امریکہ، متحدہ عرب امارات اور چند دوسرے ممالک اس وحشیانہ اور لاحاصل جنگ میں سعودی عرب کی حمایت اور اس کا ساتھ دے رہے ہیں۔

Aug ۰۹, ۲۰۱۸ ۱۵:۴۶ Asia/Tehran
کمنٹس