Feb ۱۵, ۲۰۲۰ ۱۰:۱۸ Asia/Tehran
  • یمنی فورسز کی بڑی کارروائی سعودی اتحاد کا جنگی طیارہ تباہ

یمن کی فوج اور عوامی رضاکار فورسز نے آدھی رات کو شمال مغربی یمن کےصوبہ الجوف میں سعودی عرب کے قیادت والے اتحادی فوج کے لڑاکا طیارے تورناڈو کو مار گرایا ہے۔

العالم کی رپورٹ کے مطابق یمن کی مسلح افواج کے ترجمان یحیی السریع نے کہا ہے کہ سعودی اتحاد کے جنگی طیارے کو زمین سے فضا میں مار کرنے والے پیشرفتہ اور جدید ترین ٹیکنالوجی سے سرنگوں کیا ہے۔ تباہ ہونے والے لڑاکا طیارے تورناڈو کو برطانیہ، جرمنی اور اٹلی نے مشترکہ طور پر بنایا ہے۔

یحیی السریع نے کہا کہ یہ لڑاکا طیارہ فوجی کارروائی کرنا چاہتا تھا جسے تباہ کر دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ یمن کی فضا دشمن کی کارروائی کیلئے آزاد نہیں ہے اور دشمن کو فضائی کارروائی کرنے سے پہلے کافی سوچنا ہو گا۔یمن کے محاصرے کے باوجود یمن کی فوجی اور دفاعی طاقت و توانائی میں روز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔

سعودی عرب نے امریکا اور اسرائیل کی حمایت  سے اور اتحادی ملکوں کے ساتھ مل کر چھبیس مارچ دوہزار پندرہ سے یمن پر وحشیانہ جارحیتوں کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے ۔ اس دوران سعودی حملوں میں دسیوں ہزار یمنی شہری شہید اور زخمی ہوئے ہیں جبکہ دسیوں لاکھ یمنی باشندے اپنے گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہوئے ہیں ۔

یمن کا محاصرہ جاری رہنے کی وجہ سے یمنی عوام کو شدید غذائی قلت اور طبی سہولتوں اور دواؤں کے فقدان کا سامنا ہے ۔

 سعودی عرب نے غریب اسلامی ملک یمن کی بیشتر بنیادی تنصیبات اسپتال اور حتی مسجدوں کو بھی منہدم کردیا ہے  لیکن اس کے باوجود سعودی عرب یمن پر مسلط کردہ جنگ میں اپنے اہداف تک پہنچنے میں بری طرح ناکام ہوگیا ہے۔

ٹیگس

کمنٹس