Feb ۱۶, ۲۰۲۰ ۱۳:۱۵ Asia/Tehran

جارح سعودی اتحاد کے فوجیوں نے جمعے کو صوبہ الحدیدہ میں جنگ بندی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے سات جولائی علاقے کے کچھ مقامات پر میزائل برسائے اور توپوں کے گولے داغے۔سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے التحیتا کے پہاڑی علاقوں اور صوبہ الحدیدہ کے مشرقی حیس علاقے کو میزائلی حملوں کا نشانہ بنایا۔

جارح سعودی اتحاد کے توپخانوں اور میزائلی حملوں کے نتیجے میں عام شہریوں کے متعدد مکانات ڈھےگئے اور مال و اسباب تباہ و برباد ہوگئے۔ اسی طرح سعودی جنگی طیاروں نے صوبہ صعدہ کے رازح ، سحار و حیدان اور صوبہ الجوف کے الغیل ، خب ، الشعب اور المتون علاقوں پر کئی بار بمباری کی۔ درایں اثنا جارح سعودی اتحاد کے کچھ کرائے کے فوجیوں نے گذشتہ رات جیزان کے علاقے میں گھات لگا کر یمنی فوج کے کئی جوانوں کو شہید اور زخمی کردیا۔ درایں اثنا یمن کی فوج اور عوامی رضاکار فورس نے سنیچر کی صبح شمال مغربی یمن کےصوبہ الجوف میں جارح سعودی اتحاد کے جنگی طیارے ٹورناڈو کو مار گرایا۔

سعودی عرب امریکا ، اسرائیل، متحدہ عرب امارات اور چند دیگر ممالک کی مدد سے چھبیس مارچ دوہزار پندرہ سے یمن کا بحری ، فضائی اور بری محاصرہ کئے ہے ۔سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں کے جارحانہ حملوں میں اب تک سولہ ہزار سے زیادہ یمنی شہید دسیوں ہزار زخمی اور لاکھوں بےگھر اور دربدر ہوچکے ہیں ۔یمن کا ظالمانہ محاصرہ جاری رہنے کی وجہ سے یمنی عوام کو شدید غذائی قلت اور طبی سہولتوں و دواؤں کے فقدان کا سامنا ہے تاہم یمنی عوام کی استقامت و پائداری کی بنا پر سعودی عرب اور اس کا جارح اتحاد اب تک اپنا کوئی بھی مقصد حاصل نہیں کر سکا ہے۔

ٹیگس

کمنٹس