Jun ۱۹, ۲۰۲۰ ۱۴:۴۱ Asia/Tehran
  • کورونا نےامریکی اقتصاد کو دبوچ لیا

کورونا وائرس نے امریکہ کے اقتصاد پرکاری ضرب لگاتے ہوئے ساڑھے چار کروڑ امریکی شہریوں کو روزگار سے محروم کر دیا۔

آئی آر آئی بی نیوز کے مطابق امریکہ میں کورونا کے سبب گزشتہ تین ماہ کے دوران ساڑھے چار کروڑ امریکی بے روزگار ہو چکے ہیں اور انہوں نے بے روزگاری کا مخصوص فنڈ حاصل کرنے کے لئے اپنے ناموں کا اندراج کیا ہے۔

گزشتہ ایک ہفتے کے دوران پندرہ لاکھ لوگوں نے اپنے بے روزگار ہونے کا اعلان کرتے ہوئے مخصوص امدادی فنڈ حاصل کرنے کی درخواست دی ہے۔

کورونا نے امریکہ کو مختلف شعبوں میں سخت اور دشوار حالات سے روبرو کر دیا ہے اور ماہرین کا کہنا ہے کہ اس عالمی وبا کے سبب امریکہ میں پیدا ہونے والے اقتصادی جمود کے اثرات سالہا سال تک باقی رہیں گے۔

اس وقت امریکہ میں ماہانہ بے روزگاری کی شرح اپنی اعلیٰ ترین سطح تک پہنچ چکی ہے جسکی مثال 1930 کے بعد اِس ملک میں کبھی نہیں ملتی۔

خیال رہے کہ امریکی سیاستدانوں کے علاوہ رائے عامہ بھی ڈونلڈ ٹرمپ حکومت کو ملک کی موجودہ صورتحال کا ذمہ دار قرار دیتی ہے اور ان کا کہنا ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ نے کورونا کو قابو میں کرنے کے لئے دیر سے اقدام کیا۔

 تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق اب تک امریکہ میں بائیس لاکھ ترسٹھ ہزار چھے سو سے زائد افراد کورونا کا شکار ہو چکے ہیں جن میں سے ایک لاکھ بیس ہزار کو اپنی جان گنوانی پڑی ہے ۔

ٹیگس

کمنٹس