Aug ۰۴, ۲۰۲۰ ۲۱:۲۰ Asia/Tehran
  • ایٹمی بمباری کی برسی پر جاپان کا انتباہ: ایسا جرم کبھی نہ دوہرایا جائے

جاپان کے وزیر اعظم نے کہا کہ ہیروشیما اور ناگاساکی پر ہونے والی ایٹمی بمباری جیسے واقعات کبھی دوہرائے نہیں جانے چاہیے۔

جاپان کے وزیر اعظم شینزو آبے نے اپنے ملک کے دو شہروں ہیروشیما اور ناگاساکی پر کی گئي ایٹمی بمباری کی پچھترویں برسی کی مناسبت سے اپنے ایک بیان میں امریکی دہشت گردی سے متاثر ہونے والے خاندانوں سے ہمدری جتائي اور اس عزم کا اعلان کیا کہ ان کا ملک ایٹمی ہتھیار بنانے، انھیں محفوظ رکھنے یا انھیں برآمد کرنے کا کوئي ارادہ نہیں رکھتا۔

یاد رہے کہ چھے اگست سن انیس سو پینتالیس کو امریکہ کے ایک بمبار طیارے نے جاپان کے شہر ہیروشیما پر ایک ایٹمی بم گرایا تھا اور اس کے تین ہی دن بعد دوسرے شہر ناگاساکی پر بھی ایٹمی حملہ کر دیا تھا۔ اس کے ان ایٹمی حملوں کے سبب جاپان کے سوا دو لاکھ لوگوں کی موت ہو گئي تھی جبکہ دسیوں لاکھ افراد ایٹمی تابکاری سے متاثر ہوئے تھے جس کے نتائج آج بھی ان علاقوں کے لوگوں میں دیکھے جا سکتے ہیں۔

ٹیگس

کمنٹس