Jul ۱۰, ۲۰۲۰ ۰۹:۲۷ Asia/Tehran
  • ایران کے ہاتھوں امریکہ کو ایک اور شکست

اقوام متحدہ کے یورپی ہیڈ کوارٹرمیں تعینات ایران کے مستقل مندوب نے جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت کے بارے میں سلامتی کونسل کی انسانی حقوق سے متعلق اجلاس کو اہم قرار دیتے ہوئے عالمی اداروں میں اس کیس کی پیروی کو ایران کا قانونی حق قرار دیا۔

جنیوا میں قائم اقوام متحدہ کے یورپی ہیڈ کوارٹر میں تعینات ایران کے سفیر اور مستقل مندوب اسماعیل بقایی ہامانہ نے کل رات المیادین ٹیلی ویژن چینل سے گفتگو کرتے ہوئے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی 44 ویں نشست کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اس اجلاس میں کسی بھی ملک نے امریکہ کی جانب سے جنرل قاسم سلیمانی کو شہید کرنے کی دہشتگردانہ کارروائی کی حمایت نہیں کی۔ انہوں نے کہا کہ جنرل قاسم سلیمانی کو شہید کرنے کے وقت سے ہی یہ ایک بین الاقوامی مسئلہ بن گیا۔

واضح رہے کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی انسانی حقوق کی کونسل نے کل جنیوا میں اپنے 44 ویں اجلاس میں بعض ملکوں کی غیر قانونی اقدامات اور امریکہ کے ہاتھوں جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت کی مذمت کی۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ 3 جنوری کو عراق کے دارالحکومت بغداد کے ایئرپورٹ پر امریکہ کی جانب سے راکٹ حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی  کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی اورعراق کی عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے ڈپٹی کمانڈر ابومہدی المہندس سمیت ان کے 8 ساتھی شہید ہوگئے۔

دنیا بالخصوص عالم اسلام اور علاقے کی اہم خبروں کے لیے ہمارا واٹس ایپ گروپ جوائن کیجئے!

Group1 Invite link

https://chat.whatsapp.com/BnSULu73lVs92I9siS25as

Group2 Invite link

https://chat.whatsapp.com/HpuAlxRqJKIGqNpUyw64ia

ٹیگس

کمنٹس