May ۲۶, ۲۰۲۰ ۰۸:۲۹ Asia/Tehran
  • صیہونی فوج کی تاریخی شکست کی سالگرہ

ایران کے وزیر خارجہ اور یمن کی تحریک انصار اللہ کے ترجمان نے صیہونی چنگل سے جنوبی لبنان کی آزادی کی سالگرہ کے موقع پر حزب اللہِ لبنان کو مبارکباد پیش کی ہے۔

آئی آر آئی بی نیوز کے مطابق محمد عبد السلام نے حزب اللہِ لبنان کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ پچیس مئی سنہ دوہزار میں صیہونی ٹولے نے استقامتی محاذ اور حزب اللہ سے منسلک ہمارے بھائیوں کے ہاتھوں ذلت آمیز شکست کھائی اور تمام تر حقارت کے ساتھ سرزمین مسلمین سے پسپائی اختیار کرنے پر مجبور ہو گیا۔

ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے بھی حزب اللہِ لبنان کے ہاتھوں حاصل ہونے والی جنوبی لبنان کی آزادی کی سالگرہ پر مبارکباد پیش کی۔ جواد ظریف نے اپنے لبنانی ہم منصب ناسِف حِتّی اور حزب اللہ کے سکریٹری جنرل سید حسن نصر اللہ کے نام اپنے پیغامات میں لبنان کی حکومت، عوام، شہدا کے اہل خانہ اور صیہونیوں کے خلاف جنگ میں معذور ہو جانے والوں کو مبارکباد پیش کی اور انکی سلامتی و سربلندی کے لئے دعا کی۔

ایران کے وزیر خارجہ نے غاصب صیہونی ٹولے کے خلاف حاصل ہونے والی اس تاریخی کامیابی کو لبنانی حکومت و عوام، فوج اور استقامتی محاذ کے آپسی اتحاد کا نتیجہ قرار دیا۔

ابھی حال ہی میں صیہونی ٹولے کی مسلح افواج کے سابق سربراہ گیڈی آیزنکوٹ نے بھی برسوں کے بعد حزب اللہ کے مقابلے میں اپنی شکست کا اعتراف کیا ہے۔ آیزنکوٹ کا کہنا تھا کہ حزب اللہ نے اپنے ایک پیچیدہ آپریشن کے ذریعے اسرائیلی فوج کو آشفتہ کیا اور نتیجے میں بڑی تعداد میں ہمارے فوجی مارے گئے، اس لئے جنوبی لبنان سے ہمیں پیچھے ہٹنا پڑا۔

قابل ذکر ہے کہ پچیس مئی سنہ دوہزار میں غاصب صیہونی ٹولے نے اپنی تمام تر پیشرفتہ فوجی و عسکری توانائیوں کے باوجود حزب اللہ کے جوانوں کے سامنے گھٹنے ٹیکتے ہوئے جنوبی لبنان سے پسپائی اختیار کی اور اب ہر سال لبنان کے عوام اپنی اس تاریخی کامیابی کا جشن مناتے ہیں۔

ٹیگس

کمنٹس