Feb ۱۱, ۲۰۱۹ ۰۸:۳۵ Asia/Tehran
  • کشمیرمیں عام ہڑتال

ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں آج مقبول بٹ کی برسی پرمکمل ہڑتال ہے۔

ہندوستان کے زیر انتظام کشمیرمیں مقبول بٹ کی برسی کے موقع پرآج مکمل ہڑتال کی جا رہی ہے، ہڑتال کا اعلان حریت پسند رہنما سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے کیاہے۔

ہڑتال کے موقع پر سری نگر سمیت پوری وادی میں کاروبارِ زندگی معطل ہے، اسکولوں، کالجوں، یونیورسٹیوں میں تدریس کا سلسلہ معطل ہے۔ جبکہ ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے مشترکہ مزاحمتی قیادت کی11فروری کو دی گئی بائیکاٹ کی کال کی حمایت کرنے کا اعلان کرتے ہوئے تمام وکیلوں سے کہاہے کہ وہ 11فروری کو عدالتوں کا بائیکاٹ کریں ۔

مقبول بٹ کی برسی کے موقع پر حریت پسند رہنماؤں کی جانب سے سری نگر کی لال چوک پر احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گے جب کہ اقوام متحدہ کے جرنل سیکریٹری کو بھی کشمیر کے تنازع کے حل کے لیے  یاد داشت بھیجی جائے گی۔ ہڑتال کے موقع پروادی میں سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔

حریت قیادت نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ مقبول بٹ کی جدوجہد کشمیر کی تاریخ کا تابناک باب ہےاورکشمیری ان کی قربانیوں کو فراموش نہیں کریں گے۔

حریت قیادت نے دہلی کی تہاڑ جیل کے احاطے میں سپردِ خاک مقبول بٹ کی میت کو حوالے کرنے کا مطالبہ بھی کیا۔

واضح رہے کہ مقبول بٹ کو 11 فروری 1984 کو تہاڑ جیل نئی دہلی میں پھانسی دی گئی تھی۔

 

ٹیگس

کمنٹس