Jan ۲۱, ۲۰۲۰ ۱۲:۰۶ Asia/Tehran
  • برطانوی سفیر کو سخت وارننگ دی گئی ہے: سید عباس عراقچی

نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے سیاسی امور نے کہا ہے کہ غیرقانونی جلسے میں شرکت کی وجہ سے برطانوی سفیر کو سخت وارننگ دی گئی کہ ایران میں ایسے اقدام کے دہرانے سے گریز کریں.

اسلامی جمہوریہ ایران کے نائب وزیر خارجہ برائے سیاسی امور سید عباس عراقچی نے گزشتہ روز ایک غیرقانونی جلسے میں برطانوی سفیر"راب مک ایر" Rob Macaire کی شرکت کے حوالے سے کہا کہ ہم نے برطانوی سفیر کو طلب کر کے اس کے ساتھ انتہائی سخت سلوک کیا۔انہوں نے کہا کہ ایرانی وزارت خارجہ کے بیان میں آیا ہے کہ اگر برطانوی سفیر اس طرح کے واقعات کو دہرائے تو ہم بھی صرف طلبی پر انحصار نہیں کریں گے.

انہوں نے کہا کہ برطانوی سفیر اپنی ذاتی وجوہات کی بناء پر گئے ہیں اور آئنده دنوں میں ایران واپس آئیں گے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ برطانوی سفیر کو 11 جنوری کو ایران میں غیر قانونی جلسے میں شرکت  کرنے پرگرفتار کیا گیا اور پھر ان کی شناخت کے بعد اور سفارتی استثنی کی وجہ سے آزاد کر دیاگیا۔ اس کے بعد 12 جنوری کو تہران میں تعینات برطانوی سفیر روبرت میک ایئر کو غیر معمولی سلوک اور غیر قانونی جلسوں میں شرکت کیلئے محکمہ خارجہ میں طلب کیا گیا اور ایران کا باضابطہ احتجاج ریکارڈ کرایا۔ بعض عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ برطارنوی سفیر کو مظاہرے کی تصاویر اور ویڈیوز بنانے پر گرفتار کیا گیا۔

ٹیگس

کمنٹس