Nov ۱۶, ۲۰۱۸ ۱۹:۱۹ Asia/Tehran
  • روہنگیا پناہ گزینوں کا میانمار حکومت کے خلاف مظاہرہ

ہزاروں پناہ گزیں روہنگیا مسلمانوں نے میانمار حکومت کی ظالمانہ اور تشدد آمیز پالیسیوں کے خلاف مظاہرہ کرکے بنگلہ دیش سے واپس میانمار جانے سے انکار کر دیا ہے۔

بنگلہ دیش میں پناہ گزیں روہنگیا مسلمانوں نے پناہ گزینوں کے پہلے گروپ کو میانمار منتقل کئے جانے سے قبل  ایک مظاہرہ کرکے کہا ہے کہ وہ شہری حقوق حاصل کئے بغیر میانمار واپس نہیں جائیں گے۔

روہنگیا پناہ گزینوں کے اس مظاہرے کے بعد ان کی میانمار واپسی کا عمل بھی فی الحال روک دیا گیا ہے۔

میانمار اور بنگلہ دیش نے گذشتہ اکتوبر کے مہینے میں اس بات پر اتفاق کیا تھا کہ لاکھوں روہنگیا پناہ گزیں مسلمانوں کو بنگلہ دیش سے واپس میانمار بھیجنے کا کام شروع کیا جائے۔

گذشتہ برس پچیس اگست سے روہنگیا مسلمانوں کے خلاف میانمار کی فوج اور انتہا پسند بدھسٹوں کے حملوں کی نئی لہر میں جو میانمار کے صوبے راخین میں انجام دئے گئے اب تک چھے ہزار سے زائد مسلمان جاں بحق اور آٹھ ہزار دیگر زخمی ہوئے ہیں جبکہ دس لاکھ روہنگیا مسلمان فرار کرکے بنگلہ دیش میں پناہ لینے پر مجبور ہوئے ہیں۔

ٹیگس

کمنٹس