Aug ۰۷, ۲۰۲۰ ۱۱:۲۱ Asia/Tehran
  • کشمیر اور بابری مسجد معاملے پر پاکستانی وزیر نے سعودی عرب کو آڑے ہاتھوں لیا

مسئلہ کشمیر اور بابری مسجد کی شہادت کےتعلق سے سعودی عرب کی خاموشی اور مصلحت پسندانہ کردار پر پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کڑی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب نے ہمیں مایوس کیا ہے۔

پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے نجی ٹی وی چینل اے آر وائی کے ایک سیاسی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کشمیر سے متعلق سعودی عرب کی پالیسیوں پر سخت تنقید کی۔ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کیساتھ پاکستان کے برادرانہ تعلقات ہیں اور پاکستانی مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ کی حفاظت کیلئے اپنی جان تک قربان کر سکتے ہیں، تاہم اب سعودی عرب کو فیصلہ کرنا ہوگا کہ کشمیر کے معاملے پر وہ ہمارا ساتھ دے گا یا نہیں۔

پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ میں وزیراعظم سے کہوں گا کہ اگر سعودی عرب ہمارا ساتھ نہیں دیتا تو پھر ہم مزید انتظار نہیں کر سکتے، اب پاکستان کو خود آگے بڑھنا ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ سعودی عرب نے ملائیشیا کانفرنس میں شرکت نہ کرنے کا کہا تھا جس کے بعد ہمیں کانفرنس میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کرنا پڑا۔

شاہ محمود قریشی نے کشمیر کے معاملے پر او آئی سی کے کردار پر بھی تنقید کی۔ انہوں نے او آئی سی سے سوال کیا کہ وہ بتائے کہ آخر کیوں ہندوستان میں بابری مسجد کی جگہ رام مندر کی تعمیر اورکیوں ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں جاری مظالم پر خاموش ہے۔

ٹیگس

کمنٹس