Jun ۲۴, ۲۰۲۰ ۲۲:۳۶ Asia/Tehran
  • عراق، داعش کے خلاف فوج کا زبردست آپریشن، 89 گاؤں آزاد

عراق میں داعش کے دہشت گردوں کے خلاف فوج کا آپریشن کامیابی کے ساتھ جاری ہے۔

عراقی فوج کے مشترکہ آپریشنل کمانڈ کے کمانڈر نے ایک بیان جاری کرکے دہشت گرد گروہ داعش کے خلاف فوج کے آپریشن " عراقی ہیروز" کے تیسرے مرحلے کے نتائج بیان کئے ہیں۔

عراقی فوج کے کمانڈر جنرل عبد اللہ الشمری نے کہا کہ یہ فوجی آپریشن، فوجی، سیکورٹی اہلکاروں، پولیس اہلکاروں، فضائیہ اور عالمی اتحاد کے تعاون سے انجام دیا گیا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ فوجی آپریشن صوبہ صلاح الدین کے 4853 کیلومیٹر مربع علاقے میں انجام دیا گیا۔ 

عراقی فوج کے کمانڈر کا کہنا تھا کہ اس آپریشن کے دوران دہشت گردوں کے 29 ٹھکانوں، دو ہتھیاروں کے گوداموں، دہشت گردی کے ایک مرکز، ایک لانچر پیڈ،11 میزائیلوں، بڑی تعداد میں ہتھیار اور گولہ بارود، داعش کی متعدد گاڑیوں، بم بنانے کے 6 کارخانوں، متعدد کار بموں، کئی سرنگوں، 76 بم اور دھماکہ خیز مواد برآمد اور تباہ کئے گئے جبکہ اس دوران 89 گاؤں اور دیہی علاقوں کو دہشت گرد گروہ داعش کے وجود سے پاک کیا گیا۔

عراقی فوج کے کمانڈر جنرل عبد اللہ الشمری کا کہنا تھا کہ اس آپریشن کے دوران بارودی سرنگ کی زد میں آنے سے الحشد الشعبی کے دو اہلکار شہید جبکہ 10 فوجی اور رضاکار زخمی ہوئے ۔

ٹیگس

کمنٹس