Aug ۰۷, ۲۰۲۰ ۲۲:۱۷ Asia/Tehran
  • برائن ہک کے بدلنے سے امریکہ کی پالیسیوں میں کوئي تبدیلی نہیں آئے گي: ایران

وزارت خارجہ کے ترجمان نے ایران کے امور میں امریکا کے خصوصی نمائندے کی تبدیلی پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ برائن ہک کے بدلنے سے امریکہ کی پالیسیوں میں کوئي تبدیلی نہیں آئے گي۔

سید عباس موسوی نے جمعے کے روز ٹویٹ کر کے کہا ہے کہ جب ایران کے سلسلے میں امریکہ کی پالیسی کی بات ہو تو ایران کے امور میں امریکی صدر کے خصوصی نمائندے برائن ہک اور اسی طرح وائٹ ہاؤس کے قومی سلامتی کے سابق مشیر جان بولٹن کے درمیان کوئي فرق نہیں ہے۔ انھوں نے اپنے ٹویٹ میں لکھا ہے کہ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیئو اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا معاملہ بھی ایسا ہی ہے۔

واضح رہے کہ ایران کے امور میں امریکی صدر کے خصوصی نمائندے برائن ہک نے جمعرات کو اعلان کیا تھا کہ انھوں نے اپنے عہدے سے استعفی دے دیا ہے۔ ہک، اپنی ایران مخالف پالیسیوں کی وجہ سے بہت مشہور تھے اور انھوں نے ایٹمی سمجھوتے کی بھی کھل کر مخالفت کی تھی۔

ٹیگس

کمنٹس