• پاکستان کی فوجی امداد میں کٹوتی

ٹرمپ انتظامیہ نے پاکستان سے وعدہ شدہ 225 ملین ڈالر کی فوجی امداد روکتے ہوئے نئی شرائط عائد کردی ہیں۔

امریکی اخبار نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق ٹرمپ انتظامیہ نے کانگریس کو اس بات سے آگاہ کیا ہے کہ اس نے فوجی امداد کی مد میں پاکستان کے لیے 25 کروڑ 50 لاکھ ڈالر مختص کررکھے ہیں ۔

ذرائع کے مطابق اسلام آباد محض اسی صورت میں یہ امداد حاصل کرسکتا ہے جب وہ ان دہشت گرد نیٹ ورکس کے خلاف موثر کارروائی کرے جو پڑوسی ملک افغانستان پر حملوں میں ملوث ہیں۔

اخبار کے مطابق 2002 سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کردار ادا کرنے پر امریکا کی جانب سے پاکستان کو تقریباً 33 ارب ڈالرز دیے جاچکے ہیں۔

واضح رہے کہ حالیہ چند برسوں کے دوران امریکی امداد میں بتدریج کمی آئی ہے کیوں کہ امریکی حکام کا کہنا ہے کہ پاکستان اپنی سرزمین پر مخصوص دہشت گرد نیٹ ورکس کے خلاف کارروائی نہیں کررہا ہے۔ جبکہ پاکستان اس قسم کے امریکی الزامات کو مسترد کرتا ہے۔

 

Sep ۰۲, ۲۰۱۷ ۰۵:۴۲ UTC
کمنٹس