Jun ۱۵, ۲۰۱۹ ۰۷:۴۰ Asia/Tehran
  • ایران جوہری معاہدے کی حمایت اور دہشت گردی کے خلاف تعاون : شنگھائی اعلامیہ

بشکک میں شنگھائی تعاون تنظیم کے 19ویں سربراہی اجلاس کا اعلامیہ جاری کردیا گیا، جس میں کہا گیا کہ رکن ممالک دہشت گردی کی ہر شکل اور کارروائی کی مذمت کرتے ہیں۔

کرغزستان کے دارالحکومت بیشکک میں شنگھائی تعاون تنظیم کے 19 ویں اجلاس کا بروز جمعہ اختتام ہوا جس میں فریقین نے مشترکہ اعلامیہ میں ایران جوہری معاہدے کی مکمل حمایت پر زور دیا۔

کرغزستان میں ہونے والے ایس سی او سمٹ2019ءکے اعلامیے میں کہا گیا کہ بین الاقوامی برادری دہشت گردی کے خلاف کوششوں میں عالمی تعاون کو مضبوط کرے۔

اعلامیے کے مطابق دہشت گردی کے خلاف عالمی تعاون اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کاؤنٹر ٹیرراسٹریٹجی کے تحت کیا جائے۔

ایس سی او سمٹ 2019 کے اعلامیے میں یہ بھی کہا گیا کہ دہشت گردی کے خلاف تعاون دوہرے معیار اور اسے سیاست زدہ کیے بغیر کیا جائے۔

شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہی اجلاس کے اعلامیے میں مزید کہا کہ دہشت گردی کے خلاف کوششوں میں تمام ریاستوں کی خود مختاری اور آزادی کا احترام کیا جائے۔

اعلامیے کے مطابق رکن ممالک دہشت گردی اور اس کے نظریے سے موثر نمٹنے کےلیے جامع اقدامات پر عملدرآمد کو اہم سمجھیں۔

شنگھائی تعاون تنظیم کے اعلامیے میں یہ بھی کہا گیا کہ دہشت گردی سے نمٹنے کی آڑ میں ریاستوں کے اندرونی معاملات میں مداخلت ناقابل قبول ہے۔

ایس سی او سمٹ 2019 کے اعلامیے کے مطابق دہشت گرد،انتہاپسند اور بنیاد پرست گروپوں کا جتھوں کی شکل میں اکھٹے ہونا ناقابل قبول ہے۔

اجلاس میں ایران،چین، روس، ہندوستان، پاکستان، افغانستان سمیت دیگر ممالک کے سربراہان نے شرکت کی اور اعلامیے پر دستخط کئے۔

 

ٹیگس

کمنٹس