Sep ۲۰, ۲۰۲۰ ۲۳:۰۹ Asia/Tehran
  • آئی اے ای اے کے رکن ملکوں کی امریکہ پر کڑی نکتہ چینی

عالمی اداروں اور تنظیموں میں ایران کے مستقل مندوب کاظم غریب آبادی نے کہا ہے کہ آئی اے ای اے کے بورڈ آف گورنرز کے اجلاس کے بیشتر مندوبیں نے ایٹمی معاہدے کی حمایت کا اعادہ کیا ہے۔

ویانا میں آئی اے ای اے کے اجلاس کے نتائج کے بارے میں بیان دیتے ہوئے کاظم غریب آبادی کا کہنا تھا کہ اس اجلاس میں پچاس سے زائد رکن مندوبین نے اپنے بیانات میں ایٹمی معاہدے سے امریکہ کے نکل جانے پر کڑی نکتہ چینی کی۔
انہوں نے کہا کہ امریکہ، صیہونی حکومت اور چند ایک عرب ملکوں کے سوا بورڈ آف گورنرز کے اجلاس میں شریک تمام مندوبین نے ایٹمی معاہدے کو سفارت کاری کی اہم ترین کامیابی اور کثرالفریقی تعاون کی بہترین مثال قرار دیا ہے۔
کاظم غریب آبادی نے کہا کہ اجلاس کے دوران اسرائیل کی ایٹمی سرگرمیوں کا معاملہ بھی زیر بحث رہا ہے اور ایٹمی ہتھیاروں تک رسائی پر گہری تشویش ظاہر کی گئی۔
 انہوں نے کہا کہ آئی اے ای اے کے اجلاس کے دوران پہلی بار سعودی عرب کے ایٹمی پروگرام کا معاملہ بھی باضابطہ طور پر سامنے آیا اور اسے اجلاس کے ایجنڈے میں شامل کیا گیا۔

ٹیگس

کمنٹس