Dec ۳۰, ۲۰۱۹ ۱۰:۵۰ Asia/Tehran
  • حشد الشعبی پر حملے کے بعد امریکی سفارتکاروں اور فوجیوں میں سراسیمگی

امریکہ نے حشد الشعبی پر حملے کے بعد بغداد میں اپنے سفارتخانے کے درجنوں اہلکاروں کو اس شہر سے نکال دیا ہے۔

ارنا کی رپورٹ کے مطابق حشد الشعبی پر امریکی حملے کے بعد بغداد میں امریکی سفارتکاروں میں سراسیمگی پھیل گئی اور امریکہ نے بغداد سے اپنے سفارتخانے کے درجنوں اہلکاروں کو نکال دیا ہے۔ جبکہ عراق کے صوبے الانبار میں عین الاسد اور کرکوک میں کے- ون کے امریکی فوجی اڈوں میں ہائی الرٹ جاری کر دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ کل امریکی ڈرون طیاروں نے شام اور عراق کی سرحد پر قائم حشد الشعبی کے مراکز پر حملہ کرکے کم از کم 25 اہلکاروں کو شہید اور51 کو زخمی کردیا ۔ اس رپورٹ کے مطابق امریکی ڈرون طیاروں نے القائم میں حزب اللہ عراق کے تین مراکز پر حملہ کیا اور حزب اللہ کی 45 اور 46 بریگیڈ کو نشانہ بنایا ہے۔

عراقی حکام نے امریکہ کے حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے عراقی اور عالمی قوانین کی کھلی خلاف ورزی قراردیا ہے۔

ٹیگس

کمنٹس